45

یو اے ای تمام ڈاکٹرز جو کورونا وائرس کی وبا سے لڑرہے ہیں کو10سال کا ویزا

خلیجی ممالک کی طرح متحدہ عرب امارات میں بھی غیر ملکیوں کا طویل مدتی رہائش حاصل کرنا مشکل ہوتا ہے کیونکہ عموماً انہیں موجودہ ملازمت کے حساب سے صرف محدود رہائشی ویزے دیے جاتے ہیں۔

دولت مند کاروباری حضرات اور انتہائی ہنر مند مزدوروں کو اپنی طرف راغب کرنے کےلیے متحدہ عرب امارات نے گزشتہ سال ‘گولڈن’ 10 برس کا ویزا پروگرام متعارف کرایا تھا جس میں اب توسیع کی جارہی ہے۔

اس کے بارے میں وزیر اعظم شیخ محمد بن راشد آل مکتوم نے اپنی ٹوئٹ میں بتایا کہ ڈاکٹریٹ ڈگری رکھنے والے، میڈیکل ڈاکٹرز، کمپیوٹر، الیکٹرانکس، پروگرامنگ، الیکٹریکل اور بائیوٹیکنالوجی انجینئرز اس پراگرام کے لیے اہل ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ کہ یہ صرف شروعات ہے، ہم مستقبل کی ترقی کے لیے باصلاحیت افراد کو اپنانے کے خواہشمند ہیں۔

شیخ محمد بن راشد آل مکتوم دبئی کے فرمانروا بھی ہیں جس کی معیشت خلیج میں ایک اہم حیثیت رکھتی ہے۔

بات کو جاری رکھتے ہوۓانہوں نے کہا کہ تسلیم شدہ جامعات کے طلبہ جنہوں نے بہت اچھے گریڈز حاصل کیے ہوں وہ بھی اس کے اہل ہوسکتے ہیں جبکہ جو لوگ آرٹیفشل انٹیلیجنس (مصنوعی ذہانت)، بگ ڈیٹا (بڑے ڈیٹا) اور وبائی امراض کا علم رکھنے والے (ایپیڈیمولوجی) میں اسپیشلائز ڈگری رکھتے ہوں وہ بھی اس پروگرام کو حاصل کرسکتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں