31

مصر میں امریکی بلیک ہاک ہیلی کاپٹر حادثے کا شکار

وائس آف امریکا کے مطابق، یہ تمام فوجی اسرائیل اور مصر کے مابین امن معاہدے کے تحت کثیر قومی امن فوج کے دستے میں شامل تھے۔ جمعرات کے روز یہ ہیلی کاپٹر جزیرہ نما سینائی میں معمول کی نگراں پرواز کر رہا تھا جب یہ حادثہ پیش آیا۔

اسکے علاوہ حادثے کی دیگر تفصیلات بھی جاری نہیں کی گئی ہیں جبکہ کثیر قومی امن فوج کے ترجمان نے اس حوالے سے کسی بھی قسم کی ممکنہ دہشت گردی کی تردید کرتے ہوئے اسے صرف ایک حادثہ قرار دیا ہے۔

مزید یہ کہ وائس آف امریکا کی اردو ویب سائٹ کے مطابق، یہ حادثہ اس سال امریکی فوج کو پیش آنے والا سب سے ہلاکت خیز حادثہ بھی ہے۔

اس حوالے سے نگراں امریکی وزیرِ دفاع کرس ملر کا بھی ایک بیان جاری کیا گیا ہے جس میں انہوں نے مصر میں ہلاک ہونے والے فوجیوں کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کے علاوہ ان کے اہلِ خانہ اور عزیز و اقارب سے تعزیت بھی کی ہے۔

اسکے علاوہ 1979 میں مصر اور اسرائیل کے مابین امن معاہدہ طے پایا تھا جس کے تحت ’’کثیر قومی فوج اور مبصرین‘‘ (ملٹی نیشنل فورس اینڈ آبزرورز) کا قیام عمل میں لایا گیا۔ اس میں 13 ملکوں کی افواج شامل ہیں جن میں سب سے زیادہ تعداد امریکی فوجیوں کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں