36

ایک ملزم کی گرفتاری پر پولیس کا انعام دینا حیران کن ہے،

چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ قاسم خان نے ریمارکس دیے ہیں کہ یہ پنجاب حکومت نے نیا طریقہ ڈھونڈ لیا ہے، کیا پولیس کا کام ملزموں کو پکڑنا نہیں؟ پولیس اہلکار اگر ملزموں کو نہیں پکڑیں گے تو کیا کریں گے۔چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کا کہنا تھا کہ ملزم پکڑا نہیں جاتا اور پولیس والے قبضے کر رہے ہیں، یہ بتائیں کہ پولیس نے قبضہ کس طرح کیا ہے، ، پولیس قانون کی خلاف ورزی کرے گی تو وردیاں اتروا کر گھر بھیجوں گا۔

پنجاب پولیس نے موٹروے گینگ ریپ کیس کے مرکزی ملزم عابد کو 12 اکتوبر کو گرفتار کیا گیا تھا9 ستمبر منگل اور بدھ کی درمیانی شب لاہور-سیالکوٹ موٹروے کے پر گجرپورہ کے علاقے میں مسلح افراد نے ایک خاتون کو اس وقت گینگ ریپ کا نشانہ بنایا تھا جب وہ گاڑی بند ہونے پر اپنے بچوں کے ہمراہ موٹروے پر مدد کی منتظر تھیں۔

اس واقعے پرحکومت بھی ایکشن میں آئی تھیپنجاب پولیس نے مختلف تحقیقاتی ٹیمیں تشکیل دی تھیں عوام میں شدید غم و غصہ پایا گیا تھا وزیراعلیٰ پنجابنے بھی صوبائی وزیرقانون راجا بشارت کی سربراہی میں ایک خصوصی کمیٹی بنائی تھی۔

مرکزی ملزم عابد کو 12 اکتوبر کو گرفتار ہو گیا ھے اہم ملزم کے والد کی جانب سے یہ بیان سامنے آیا تھا انکے بیٹے نے پولیس کو خود گرفتاری دی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں