8

پی ٹی آئی رہنما کے کاغذات نامزدگی مسترد،لیاقت جتوئی سے اب عدالت میں بات ہو گی ، سیف اللہ ابڑو کا اعلان

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک /این این آئی )لیاقت جتوئی کی جانب سے پیسوں کے عوض ٹکٹ حاصل کرنے کے الزامات مسترد، سیف اللہ ابڑو نے لیاقت جتوئی کو قانونی نوٹس بھیجنے کا اعلان ، الزامات لگائے وہ بے بنیاد ہیں۔تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی رہنما سیف اللہ نے کہا ہے کہ کتنے دنوں سے آپ لوگ میرے خلاف لابنگ کر رہے ہیں۔ لیاقت جتوئی کو آج ہتک عزت کا نوٹس بھیجوں گا۔لیاقت جتوئی سے اب عدالت میں ملاقات ہوگی۔سیف اللہ ابڑو نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے مجھے ٹکٹ دیا تھا اور ان کے اعتماد پر شکر گزار

ہوں۔خیال رہے کہ گزشتہ روز الیکشن ٹربیونل نے ریٹرننگ افسر کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے پی ٹی آئی کے امیدوار سیف اللہ ابڑو کے کاغذات نامزدگی مسترد کردیے تھے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز سابق وزیر اعلیٰ سندھ اورپاکستان تحریک انصاف کے رہنما لیاقت جتوئی نے الزام لگایا ہے کہ سیف اللہ ابڑو کو 35 کروڑ روپے کے عیوض سینیٹ ٹکٹ دیا گیا۔سابق وزیر اعلی لیاقت جتوئی اپنی ہی پارٹی کے خلاف کھڑے ہوگئے، انہوں نے الزام لگایا ہے کہ گورنر ہائوس میں سیف اللہ ابڑو کو 35 کروڑ روپے کے عیوض سینیٹ ٹکٹ دیا گیا ہے۔لیاقت جتوئی کی جانب سے وزیر اعظم عمران خان کو شکایت خط لکھا گیا، جس میں کہا گیا کہ ہمیں نظرانداز کیا جارہا ہے۔ پارٹی میں مسلسل نظرانداز کرنے پر راستے الگ ہوسکتے ہیں۔ ہماری تجاویز کو نظرانداز کیا گیا۔خط میں انہوں نے کہا کہ کہا جارہا ہے کہ جتوئی برادران کی قربانیاں نہیں ہیں۔ سندھ کے اہم فیصلے گورنر ہائوس کے ڈرائنگ روم میں کئے جارہے ہیں۔لیاقت جتوئی نے 26 فروری کو پارٹی رہنمائوں سمیت اپنے ساتھیوں کا اجلاس طلب کرلیا۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں