12

جس پریذائیڈنگ افسر نے بکنے سے انکار کیاوہ ویڈیو میرے پاس ہے، مریم نواز شریف نے بڑا دعویٰ کر دیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز شریف نے دعویٰ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمارے پاس وہ ویڈیوز موجود ہیں جس میں الیکشن کمیشن کے پریذائیڈنگ افسر نے کہا کہ انہیں ایک گاڑی میں کچھ لوگ لینے آئے، جنہوں نے انہیں الیکشن کمیشن کے دفتر جانے سے روکا۔نجی ٹی وی سماء کے مطابق سیالکوٹ کے حلقہ ڈسکہ روانگی سے قبل جاتی امرا میںمیڈیا سے گفتگو میں پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز شریف نے بڑا دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ اس ضمنی الیکشن میں 2 قیمتی جانیں چلی گئیں، وہاں

کی عوام نے جمہوریت کی جنگ لڑی ہے۔ ڈسکہ کے عوام نے ووٹ کو عزت دی ہے۔ میں دسکہ کے عوام کا شکریہ ادا کرنے وہاں جا رہی ہوں۔ ڈسکہ کی عوام نے آخری لمحوں تک اپنے ووٹوں پر پہرہ بھی دیا ہے۔مریم نواز نے کہا کہ ڈسکہ میں ہونے والے الیکشن میں پریذائیڈنگ افسران نے بکنے سے انکار کر دیا۔ کل ویڈیو سامنے آئی جس میں پریذائیڈنگ افسر نے بکنے سے انکار کیا۔ وہ ویڈیوز میرے پاس ہے۔ وہ افسر یہ بات کر رہا ہے کہ کچھ لوگ گاڑی میں بیٹھ کر آئے اور کہا کہ آپ کو الیکشن کمیشن کی گاڑی میں بیٹھ کر نہیں جانا ہے۔ گاڑی میں سوار ان افراد کا یہ بھی کہنا تھا کہ آپ کو ووٹ کے ڈبے لیکر ہمارے ساتھ جانا ہے، جس پر پریذائیڈنگ افسر نے ان سے سوال کیا کہ آپ لوگ کون ہیں؟۔ ان ویڈیوز سے تو یہ لوگ اب کھل کر سامنے آگئے ہیں۔ میں تو اب عمران خان ووٹ چور کا شکریہ ادا کرنا چاہتی ہوں۔انہوں نے کہا کہ یہ لوگ آٹا چور، گیس چور، بجلی چور اور ووٹ ہیں۔ پی ٹی آئی کا کوئی سیاسی مستقبل نہیں، ان کاشیرازہ بہت جلد بکھرے گا۔ یہ بدترین ریاستی دہشت گردی کے باوجود ڈسکہ سے ہارے اور بے نقاب ہوئے۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ ضمنی انتخابات میں حکمران بے نقاب ہوگئے، عمران خان نے عوام کو بتا دیا کہ 2018 میں ووٹ کیسےچوری کئے گئے، اور کس طرح انتخابات 2018 میں ڈاکا ڈال کر کسی طرح مسلط کیا گیا۔ ضمنی انتخابات میں عوام نے بدترین دھاندلی کے باوجود حکمرانوں کو اوقات یاد دلادی، اگر پتا ہوتا ہے حکومت نے 2 جانیں لینی ہیں تو ڈسکہ کی سیٹ ویسے ہی دے دیتے۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں