45

کراچی میں خاتون سمیت 4 ٹک ٹاکرز کے قتل کا معاملہ، خاتون ٹک ٹاکر گرفتار

کراچی(این این آئی) انویسٹی گیشن پولیس نے گارڈن میں کارپرفائرنگ سے خاتون سمیت 4 ٹک ٹاکرز کے قتل کے معاملے میںایک اور خاتون ٹک ٹاکر کو گرفتار کرلیا ہے۔گارڈن پولیس ہیڈکوارٹر کے قریب کار پر فائرنگ کر کے خاتون سمیت 4 ٹک ٹاکرز کے قتل کے معاملے پرپولیس نے ایک اور خاتون ٹک ٹاکر کو باقاعدہ گرفتار کر لیا ہے۔پولیس حکام کے مطابق گرفتار ملزمہ سویرا پاک کالونی کے قریب کی رہائشی ہے۔واردات سے قبل سویرا کی مسکان سے لڑائی ہوئی تھی اور سویرا نے ہی فون کر کے ملزم رحمن کو بلایا تھا۔پولیس حکام کے مطابق فائرنگ کرنے والا

مرکزی ملزم رحمن تاحال مفرور ہے۔واضح رہے کہ رواں ماں 2 فروری کو کراچی میں گارڈن پولیس ہیڈ کوارٹرز کے قریب 1 کار پر مسلح ملزمان نے فائرنگ کر دی تھی جس کے نتیجے میں کار میں سوار خاتون سمیت 4 افراد جاں بحق ہو گئے تھے۔زخمی اور جاں بحق افراد آپس میں دوست تھے اور بعد میں تحقیقات میں پتہ چلا تھا کہ مقتولین ٹک ٹاکرز تھے۔دوسری جانب علاقے بوٹ بیسن میں نوجوان لڑکے اور لڑکی کے قتل کی تحقیقات میں نئے انکشاف سامنے آگیا، پولیس کو تحقیقات میں دہرے قتل کی وجہ پتہ چل گئی ہے۔تحقیقاتی حکام کے مطابق لڑکے اور لڑکی کا قتل طے شدہ منصوبہ نہیں تھا۔ قتل اچانک ہونے والی لڑائی کے بعد کیا گیا، قاتلگاڑی میں تھا۔مقتول لڑکی رفع حاجت کرنے کے لیے ایک سنسان جگہ پر رکے تھے۔ وہیں ایک گاڑی بھی کھڑی تھی، جس میں مبینہ ملزم اسلحے سمیت بیٹھا تھا۔ لڑکی جب فارغ ہوئی تو اسے پتہ چلا کہ گاڑی میں کوئی موجود ہے۔اس پر لڑکی نے شور مچایا تو لڑکے اور گاڑی میں بیٹھےمبینہ ملزم کے درمیان لڑائی ہوئی۔ جھگڑے کے بعد گاڑی میں بیٹھے ملزم نے دونوں کو فائرنگ کرکے قتل کردیا۔ قتل کرنے کے بعد وہ گاڑی میں بیٹھ کر مائی کولاچی کی جانب فرار ہو گیا۔کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کی فوٹیج میں یہ گاڑی مائی کولاچی کی جانب سے آتی بھی دکھائی دیتی ہے۔ ایک عینی شاہد نے پولیس کو جھگڑے اور پورے قصے کی تصدیق کی ہے۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں