24

حلیم عادل شیخ کی گرفتاری پر پی ٹی آئی کے لوگ بھی خوش بڑا دعویٰ سامنے آگیا

کراچی(این این آئی)پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنمااور صوبائی وزیر تعلیم سعید غنی نے کہاہے کہ حلیم عادل شیخ ایک فتنہ ہے،ان کی گرفتاری پر پی ٹی آئی کے لوگ بھی خوش ہیں، الیکشن کمیشن کو ان کیخلاف ایف آئی آر کٹوانی چاہئے،ایسا کوئی رول نہیں کہ گرفتاری سے پہلے اسپیکر سے پوچھا جائے، گرفتاری کا اس صورت میں پوچھا جاتا ہے جب اسمبلی کااجلاس چل رہا ہو۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سعیدغنی نے کہا کہ کل حلیم عادل شیخ پولنگ کے عمل میں مداخلت کرتے رہے، انہوں نے خلاف قانون کام کیا، اس لیے انہیں گرفتار کیا گیا۔حلیم عادل شیخ

نے کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی کی، حلیم عادل کے واقعے پر پی ٹی آئی کے بہت سے ذمہ دار افراد بھی خوش ہیں۔انہوں نے کہا کہ جہاں جہاں ضمنی انتخاب ہوئے حلیم عادل کے جانے سے وہاں فساد ہوا، الیکشن کے دن حلقے میں جانے پر پابندی ہے لیکن یہ پھر بھی پولنگ اسٹیشنز میں گھسے، یہ شخص مسلح جتھوں کے ساتھ پولنگ اسٹیشنز میں گیا۔سعید غنی نے کہا کہ جو لوگ اس کے ساتھ تھے ان پر کئی مقدمات ہیں۔انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی امیدوار اپنے حلقوں میں لوگوں کا سامنا نہیں کر پا رہے۔ انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی حکومت میں بے روزگاری، مہنگائی میں اضافہ ہو رہا ہے، لوگ پی ٹی آئی سے تنگ آکر پی ڈی ایم جماعتوں کی طرف دیکھ رہے ہیں، پی ٹی آئی کو پریشانی ہے حکومتی ارکان انہیں ووٹ نہیں دیں گے۔ سینیٹ میں پیپلز پارٹیکے امیدواروں کو ووٹ دینے کے لیے سب سے رابطہ کریں گے، پی ٹی آئی نااہل حکومت ہے اور عوام نااہل حکومت سے عاجز ہے۔انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی کے وزراء بشمول وزیر اعظم کو آئین اور قانون کا نہیں پتا۔دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف کراچی کے صدر اوررکن سندھ اسمبلیخرم شیر زمان نے کہاہے کہ سندھ حکومت کی ہر بدمعاشی کا مقابلہ کریں گے، شروع سندھ حکومت نے کیا ختم ہم کریں گے، مقدمات سے ڈرنے والے نہیں۔میڈیا سے گفتگومیں خرم شیر زمان نے قائد حزب اختلاف پردہشتگردی کے مقدمے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ سندھ حکومت انتقامیکارروائی میں اندھی ہوچکی ہے جیلوں اور مقدمات سے ڈرنے والے نہیں تحریک انصاف ڈٹ کر مقابلہ کرے گی۔انہوں نے کہا کہ سندھ کے لوگوں نے پی پی کے وزراء کو عدالتوں سے بھاگتے ہوئے بھی دیکھا ہے۔ ہم سندھ حکومت کی ہر بدمعاشی کا مقابلہ کریں گے۔ سندھ حکومت گزشتہروز سے آئین اور اخلاقیات کی دھجیاں اڑا رہی ہے۔انہوں نے کہاکہ سندھ پولیس نے تاحال حلیم عادل شیخ پر فائرنگ کرنے والے افراد کے خلاف مقدمہ درج نہیں کیا۔ تحریک انصاف کے پاس تمام آپشن موجود ہیں، پارٹی قیادت کے فیصلے کے منتظر ہیں۔ سندھ حکومت نے شروعات کی ہے اختتام ہم کریں گے۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں