28

بی آر ٹی کی طرح عمران حکومت کو دھکے سے چلانے کی کوشش ہورہی ہے،مافیاز حکمرانوں کی ملی بھگت سے 500ارب روپے کھا گئے، مریم نواز کا دعویٰ

نوشہرہ (آن ائن)پاکستان مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ بی آر ٹی کی طرح عمران حکومت کو دھکے سے چلانے کی کوشش کی جارہی ہے، عمران حکومت نیب کو سیاسی انتقام کیلئے استعمال کررہی ہے، اپوزیشن کو نیب گردی کا نشانہ بنا رہا ہے لیکن وہ دن دور نہیں کہ جب قوم نیب کو انتقام کا نشانہ بنائےگی، دوسروں پر کرپشن کے بہتان لگانے والے اپنی حکومت پر نظر دوڑائیں ان کی حکومت میں سارے بین الااقوامی چور لٹیرے اور ڈاکو بیٹھے ہوئے ہیں آٹا مافیا، چینی مافیا، ادویات مافیا کی وجہ سے

قوم کی قوت خرید اب دے گئی ہے غریب کا جینا محال ہو گیا ہے اور ان تما م مافیاز کا سرغنہ عمران خان ہے نواز شریف کی حکومت میں ترقی کی شرح 5.7فیصد تھی اور ثاقب نثارکے صادق و امین کی حکومت میں ترقی کی شرح 0 سے بھی نیچے ہے اب وقت آگیا کہ ملکی ترقی کے سفر کو رکنے والوں کا احتساب کیا جائے ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے نوشہرہ پی کے 63میں انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر پاکستان مسلم لیگ ن کے صوبائی صدر انجینئر امیر مقام، پاکستان پیپلز پارٹی کے صوبائی صدر انجینئر ہمایوں خان، جمعیت علما اسلام کے صوبائی امیر سینٹر مولانا عطا الرحمان پی کے 63کے امیدوار اختیار ولی خان نے بھیہ خطاب کیا جبکہ اس موقع پر پاکستان مسلم لیگ ن کے سینٹرک ایگزیکٹیو کمیٹی کے رکن احسن اقبال، اور مرکزی سیکرٹری اطلاعات مریم اورنگزیب بھی موجود تھی۔ مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا کہ قومی وطن پارٹی، پاکستان پیپلز پارٹی، جے یو آئی ف، مولانا فضل الرحمان اور خصوصی طور پر مولانا عطاء الرحمان کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتی ہوں کہ انہوںنے مسلم لیگ ن کے ساتھ تعاون کیا اور اپنے امیدوار کو ن لیگ کے حق میں دستبردار کرایا۔ اپنی عزت اور حوصلہ افزائی کی بھی مشکور ہوں۔ضمنی الیکشن کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ یہ ہو نہیں سکتا کہ ڈسکہ جاؤں اور نوشہرہ نہ جاؤں، مجھے پشتو زبان سے بہت پیار ہے۔ مجھے جتنی ہمدردی پنجاب سے ہے، سندھ سے ہے،بلوچستان سے ہے اس سے زیادہ ہمدردی خیبرپختونخوا سے ہے،اس کی وجہ نالائقی، چوری اور ڈکیتی سمیت دیگر مسائل یہ صوبہ 8 سال سے برداشت کر رہا ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ وہ وقت جلد دور نہیں جب عوام ووٹ کی طاقت سے بدلہ لیں گے۔ضمنی الیکشن کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ یہ ہو نہیں سکتا کہ ڈسکہ جاؤں اور نوشہرہ نہجاؤں، انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ ن کے دور میں غریب کا چولہا جل رہا تھا، سابق دور میں آٹا، چینی، دالیں، انڈے سستے تھے، سابق حکومت میں گیس اور پٹرول سستا تھا۔ کے پی کے پولیس مجھے کہہ رہی ہے کہ اس نا اہلی سے جان چھڑاؤ۔ تحریک انصاف والے جہاں جہاں بھی الیکشن میں حصہ لیں گے یہ شکست کھائیں گے۔ عوامکو کہنا چاہتی ہوں کہ جب یہ لوگ ووٹ لینے آئیں تو ان کو بجلی کا بل، گیس کا بل اور دوائیوں کی پرچی دکھانا اور پی ٹی آئی والوں کو کہنا کس منہ سے ووٹ مانگنے آئے ہو۔ عوام، نوجوانوں، بزرگوں اور بیٹیوں سے کہتی ہوں کہ عمران خان کو ووٹ نہیں دینا۔ 19 فروری نوشہرہ اور وزیر آباد میں ن لیگ جیتے گی اور عوام کا فیصلہ شیر ہو گا۔سند ھ اور بلوچستان نے ضمنی انتخابات میں اپنا قرضہ چکا دیا اب خیبر پختونخواہ کے عوام ضلع کرم اور پی کے 63پر پی ڈی ایم کے امیدواروں کو کامیاب بنا کر اپنا قرض اتار دیں انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان بہت تابعدار ہے لیکن قوم کا نہیں بلکہ کسی اور کا انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے خیبر پختونخواہ میں ان8سالوں میں اگر کوئی کام کیا ہے تو وہ دھکا بس ہے جو چلتی کم اور جلتی زیادہ اور اسی طرح اسلام آباد میں ان کی حکومت کو دھکے سے چلانے کی کوشش کی جارہی ہے لیکن بی آرٹی کی طرح یہ بھی نہیں چل رہی، انہوں نے کہا کہ موجودہ نااہل حکمرانوں کی ملی بھگت سے 500ارب روپے مافیاز کھا گئے ہیں انہوں مزید کہا ملککے کسی بھی ادارے میں انصاف کا فیصلہ نہیں ہوا کئی ماہ سے فارن فنڈنگ کیس چل رہااور ثابت بھی ہو چکا ہے لیکن ادارے بے بس ہے انہوں نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ ووٹ کے زریعے ان نالائقوں، نااہلوں اور سلیکٹیڈحکومت کو چلاتا کریں اور 19فروری کو ان کے خلاف نہ صرف ووٹ کا استعمال کریں بلکہ اپنے ووٹ کوچوری ہونے سے بھی بچائیں انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کو نوکریاں دینے، بے گھروں کو گھر بنوا کر دینے والے سے کوئی پوچھے کہ اب تک کتنے گھر تعمیر کئے اور کتنے کو نوکریاں ملیں ہیں نوکریاں ملیں ہیں تو ان میں ذاتی ڈاکٹرزاور کیچن چلانے والے ہیں اور اگرکسی کو این اآر او ملا ہے تو پاپ جونز این آر او ملا ہے مسلم لیگ ن کینائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ لانگ مارچ عمران خان کو گھر بھیجنے کا آخری چانس ہے، ملک میں مافیا کا سربراہ اور سرغنہ عمران خان ہے جسے رخصت کرنے کا وقت آ گیا ہے، وہ وقت جلد دور نہیں جب عوام ووٹ کی طاقت سے بدلہ لیں گے۔مجھے پشتو زبان سے بہت پیار ہے۔ مجھے جتنی ہمدردی پنجاب سے ہے، سندھ سے ہے، بلوچستان سے ہے اس سے زیادہ ہمدردی خیبرپختونخوا سے ہے،اس کی وجہ نالائقی، چوری اور ڈکیتی سمیت دیگرمسائل صوبہ 8 سال سے برداشت کر رہا ہے۔ نوازشریف کی حکومت میں ترقی کی شرح 5.8 فیصد تھی، پی ٹی آئی حکومت میں یہ منفی نہیں بلکہ ترقی زمین سے نیچے چلی گئی ہے۔ ہمارے دور میں آٹے کی قیمت 35 روپے کلو تھی اب یہ قیمت 80 روپے کلو ہو گئی ہے۔ ہمارے دور میں روٹی 5 روپے کی تھی اور آج اس کی قیمت 20 روپے سے بھی زائد ہو گئی ہے۔ دوسروں کو چور کہتا ہے یہ خود چور ہے، اس کا حساب جلد ہو گا۔

موضوعات:

نیا شوکت عزیز

”ہماری مشکلات شروع ہی میں سٹارٹ ہو گئی تھیں‘ میاں نواز شریف جیل میں تھے‘ خزانہ خالی تھا‘ دوست ملکوں نے ہاتھ کھینچ لیا تھا اور مغربی اتحادیوں نے فوجی حکومت کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیا تھا‘ ہم نے اوپر سے جلدبازی میں اینٹی کرپشن مہم بھی شروع کر دی‘ جنرل مشرف پہلے احتساب پھر سیاست ….مزید پڑھئے‎

”ہماری مشکلات شروع ہی میں سٹارٹ ہو گئی تھیں‘ میاں نواز شریف جیل میں تھے‘ خزانہ خالی تھا‘ دوست ملکوں نے ہاتھ کھینچ لیا تھا اور مغربی اتحادیوں نے فوجی حکومت کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیا تھا‘ ہم نے اوپر سے جلدبازی میں اینٹی کرپشن مہم بھی شروع کر دی‘ جنرل مشرف پہلے احتساب پھر سیاست ….مزید پڑھئے‎



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں