29

پاکستان کو تنہا کرنے کے بھارتی عزائم خاک میں مل گئے امن مشق 2021 میں 40 سے زائد ممالک کی شرکت

کراچی(آن لائن) کثیر الملکی بحری مشق امن-2021 ”امن کے لیے متحد“ نصب العین کے تحت جاری ہے۔ ہفتہ بھر جاری رہنے والی یہ مشق، مشق میں شریک مختلف اقوام کو باہمی تبادلہ خیال اورمیری ٹائم تعاون کے فروغ کا موقع فراہم کرتی ہے۔مشق کی دیگر سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ پی این ایس قاسم منوڑہ کراچی میں ایک شاندار انٹرنیشنل بینڈ ڈسپلے اورانسدادِ میری ٹائم دہشت گردی کےآپریشن کا مظاہر ہ کیا گیا۔اس موقع پر چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی، جنرل ندیم رضا مہمانِ خصوصی رہے۔ انھوں نے کثیرالملکی بحری مشق امن21- کے بطریقِ احسن انعقاد پرپاک بحریہ کی کاوشوں

کو سراہا۔امن مشق 21-میں شریک ممالک کے بینڈز نے متاثر کن انٹرنیشنل بینڈزڈسپلے پیش کیا جس کا مقصد مختلف اقوام کو ثقافت کے ذریعے ایک دوسرے کے ساتھ قریب لانا ہے۔سری لنکا کے ملٹری بینڈ، پاکستان کی تینوں افواج پر مشتمل بینڈ، سندھ رینجرزکے بینڈ اورکوسٹ گارڈ کے بینڈنے روایتی اور ملٹری دھنیں بجائیں۔ان مسحورکن دھنوں کو حاضرین نے بہت پسند کیا۔ پاک میرین کی خصوصی رائفل ڈرل بھی اس سرگرمی کا حصہ تھی جس کے دوران ماہر انہ مہارتوں و صلاحیتوں کا شاندار مظاہرہ کیا گیا۔ علاو ہ ازیں پاک بحریہ کی اسپیشل آپریشنز فورسزکاانسدادِ ہشت گردی آپریشن طاقت اور خصوصی مہارتوں کا قابل رشک مظاہرہ تھاجس کا مقصد میری ٹائم دہشت گردی کا مقابلہ، اسپیشل آپریٹنگ لائحہ عمل کو مزید بہتر بنانا، پیشہ ورانہ صلاحیتوں کا تبادلہ اور مشق میں شریک اسپیشل آپریشن فورسزٹیموں کے ساتھ مشترکہ آپریشنز کرنے کی صلاحیتوں میں اضافہ تھا۔چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی، جنرل ندیم رضا نے شرکاء کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کی تعریف کی اور کہا کہ بحری مشق امن21-بحری دہشت گردی اور جرائم کے خلاف متحدہ عزم، مشترکہ آپریشنزکرنے کی صلاحیتوں میں اضافے، استحکام اور علاقائی تعاون کے فروغ میں اہم کردار اداکرے گی۔مندوبین کی ایک کثیر تعداد، غیر ملکی سفراء، مشق میں شریک بحری افواج کے آفیسرز و سیلرزاور پاکستان کی مسلح افواج کے اعلیٰ حکام نے انٹرنیشنل بینڈ ڈسپلے اور بحری دہشت گردی کے انسدادکے مظاہرے کو دیکھا۔کثیرالملکی بحری مشق امن21-کے دوران پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل محمد امجد خان نیازی نے اْردن کی نیول فورس کے کمانڈرکرنل ہشام خلیل مبارک الجراح، کمانڈر جبوتی کوسٹ گارڈکرنل ویس عمار بوگرے(Wais Omar Bogoreh)،ڈپٹی چیف آف رشین نیوی ہیڈکوارٹر ریئر ایڈمرل اولیگ اپیشیو (Oleg Apishev)، سری لنکن نیوی کے فلیٹ آفیسر کمانڈنگ ریئر ایڈمرل وائی ایم جی بی جے تھیلاک(YMGB Jayathilake)اور ڈپٹی کمانڈر یو ایس نیوسینٹ ریئر ایڈمرل کرٹ رینشا (Curt Renshaw)سے ملاقاتیں کیں۔اس کے علاوہ ڈپٹی کمانڈر رائل سعودی نیول فورسز ایسٹرن فلیٹ ریئر ایڈمرل احمد بن محمد، برازیل سرفیس فلیٹ کے کمانڈرریئر ایڈمرل روگیریو ڈا روچا(Rogerio Da Rocha)نے بھی سربراہ پاک بحریہ سے الگ الگ ملاقاتیں کیں۔ان ملاقاتوں کے دوران دفاعی اشتراک اور میری ٹائم سیکیورٹی کے مختلف اْمور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔سربراہ پاک بحریہ نے امن اور میری ٹائم سیکیورٹی کے لیے مشترکہ کاوشوں کو مزید تقویت دینے کے لیے مشق میں شرکت پر معززمہمانوں کا شکریہ اداکیا۔نیول چیف نے خطے کی میری ٹائم سیکیورٹی اور امن و استحکام کو یقینی بنانے کے سلسلے میں پاک بحریہ کے اقدامات پر روشنی ڈالی جو وہ ریجنل میری سیکیورٹی پٹرول اور دیگر ممالک کے ساتھ دو طرفہ اور کثیرالملکی تعاون کے ذریعے اْٹھارہی ہے۔معزز مہمانوں نے کثیرالقومی بحری مشق امن2021-کے انعقاد اورخطے میں مشترکہ میری ٹائم سیکیورٹی کی مدد کے ضمن میں پاک بحریہ کی کاوشوں اور عزم کا اعتراف کیا اور انہیں سراہا۔اس کے علاوہ پاک بحریہ کی سرپرستی میں نیشنل انسٹیٹیوٹ آف میری ٹائم افیئرز کے زیر انتظام کثیرالملکی بحری مشق امن 21-کے دوران منعقد ہونے والی عالمی میر ی ٹائم کانفرنس کی دوسرے دن کیسرگرمیاں بھی اختتام پذیر ہوئیں۔اس عالمی میری ٹائم کانفرنس کا موضوع ”ایک محفوظ اور پائیدار ماحول میں بحری اقتصادیات کی ترقی: بحر ہند کے مغربی خطے کے لیے ایک مشترکہ مستقبل“ ہے۔ کانفرنس کے دوسرے دن نامور قومی و عالمی اسکالرز نے میری ٹائم سیکیورٹی، ماحول اورخطے میں ترقی کے مواقع سے متعلقہ مختلف اْمور پر سیر حاصل گفتگو کی۔میری ٹائم اْمور کے وفاقی وزیر، وزیراعظم کے قومی سلامتی کے مشیر اور نامور اسکالرز نے کانفرنس میں شرکت کی جو کثیرالملکی ساتویں بحری مشق امن21-کے دوران منعقد ہو رہی ہے۔مزید برآں، امن مشق میں حصہ لینے والے ممالک کے آفیسرز و جوانوں اور پاک بحریہ کی ٹیموں کے درمیان کھیلوں کے مقابلے بھی منعقد ہوئے جن میں کرکٹ، باسکٹ بال، والی بال، شوٹنگ اور گالف کے مقابلے قابل ذکر ہیں۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں