26

عمران خان عوام کو جھوٹ اور فریب دے کر ملک کو دیوالہ ہونے کے قریب لے گئے،تہلکہ خیز دعویٰ

صوابی(این این آئی)پاکستان تحریک انصاف کے بانی کارکن اکبر ایس بابر نے کہا ہے کہ میں نے جو بڑی جنگ شروع کی ہے اس کے لئے ہم نے پاکستان تحریک انصاف کے نام سے پارٹی بنائی تھی تاکہ ہم اس پلیٹ فارم سے معاشرے میں انصاف لا کر کڑا احتساب کیا جا سکے۔پی ٹی آئی میری اور سب ورکروں کی مشترکہ پارٹی ہے میںاس نظام کے خلاف اکیلا مقابلہ کرتا رہونگا۔لہٰذا ملک کے عوام اور پاکستان تحریک انصاف کے کارکن میرے ساتھ اس جدوجہد میں بھر پور تعاون کریں۔ان خیالات کااظہار موضع ٹوپی میں پی ٹی آئی نظریاتی کارکنوں کے

ایک اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے کیا جس سے سابق ضلعی جنرل سیکرٹری یوسف علی کے علاوہ تحصیل کونسل ٹوپی کے سابق نائب ناظم یونس خان ، ضلعی رہنما عزیز خان ایڈوکیٹ اور تحصیل کونسل کے سابق رکن صبیر احمد اور محمود خان اسلام آباد نے بھی خطاب کیا۔اکبر ایس بابر نے کہا کہ بنیاد انصاف پر مبنی نظام لانے اور موروثی سیاست کے خلاف جدوجہد کرنا ملک سے کرپشن لاقانونیت کا خاتمہ اور سیاست میں سرمایہ کے عمل دخل کو روکنا تھا لیکن ہماری جدوجہد کو یرغمال بنا کر پارٹی کو دیگر سیاست کی طرز پر چلایا گیا باہر ملکوں سے کارکنوں نے پارٹی کو فنڈز دیا۔ لیکن پارٹی کے اندر مافیاز نے نہ صرف فنڈز کا غلط استعمال کیا بلکہ اپنی تجوریاں بھرنے کیلئے نوجوانوں کے جزبات کو استعمال کرکے ملک کو تناہی کی نہج پر لایا عالمی سازش کے تخت پارٹی کو فنڈز لاکر پارٹی ملازمین کے اکائونٹ کو استعمال کیا ۔عوام نے عمران خان کی بے لوث قیادت پر یقین رکھ کر پارٹی میں شمولیت اختیار کی لیکن بدلے میں عوام کو جھوٹ اور فریب دے کر ملک کو دیوالہ ہونے کے قریب لےگئے تمام کرپٹ لوگوں کو اپنے ساتھ ملایا ان کے پاس کو ئی ویژن ہے نہ کہ کوئی سیاسی بصیرت 4ہزار ارب قرض پر سود اداا کررہے ہیں آئے دن مہنگائی جن بجلی، گیس، پٹرول، آٹا، چینی، روزمرہ کی اشیا اور پٹرول مہنگا کرکے کھول دیا ہے اس موقع پر اکبر ایس بابر نے کہا کہ اس مشاورتی اجلاس کا مقصد ہی یہی ہے کہ پارٹی کسیکی جاگیر ہیں ہم کارکن ہی پارٹی کا سرمایہ ہے 1996میں پارٹی کی بنیاد رکھ ہم ساتھ چلے آئین، مینو فیسٹو بنایا، عوام کی فلاح ملک کی ترقی اور کرپشن زدہ سیاست کو ختم کرنے کیلئے قدم اٹھایا 24سالہ سیاسی جدوجہد میں پارٹی کو ایک مقام پر لاکر کھڑا کیا درمیان میں عمران خان نے مشرف کے ریفرنڈم میں پارٹی ورکروں رائے کومسترد کرکے حمایت کی بعد ازاں جب اقتدار نہیں ملا تو مشرف کے خلاف تحریک شروع کردی زرداری اور نوازشریف جس کو ہم چور اور ڈاکو کہتے آئے ہیں ان سے بدتر حکومت چلارہے ہیں اور یہ قول مشہور ہیں کہ ملک کے اداروں اور اہم عہدوں پر نااہل لوگوں کو بٹھایا جائے تو ملک معاشی، معاشرتی، طور پر تباہ ہوجاتا ہےاور پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے وہی وطیرہ اپنایا ہے الیکشن کمیشن 7سال سے فارن فنڈنگ کیس پر تاریخیں دے رہا ہے اور 7مختلف درخواستوں کے زریعے سٹے آرڈرز لیکر تلاشی دینے سے فرار حاصل کررہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ کرپٹ اور عوامی منشور سے روگردانی کرنے والوں کا محاسبہ کریں گے اب ملک کے ہر ضلع میں عوامی رابطہ مہم شروع کردی ہے۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں