24

شادی نہ کرنے کا رنج، محبوبہ نے چائے میں نشہ آور ادویات کھلا کرنوجوان کو مار دیا

پتوکی (این این آئی ) پتوکی شادی نہ کرنے کی رنجش پر محبوبہ نے اپنے ساتھیوں سے مل کر نوجوان کو گھر بلا کر چائے میں نشہ آور ادویات کھلا کر ماردیا اور ڈیڈ باڈی کو گھر کے باہر سڑک پر پھینک دیا اور ملزمان موقع سے فرار ہوگئیں پولیس نے ملز مان کے خلاف قتل کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا اور پولیس نے ملز مان کیگرفتاری کیلئے چھاپے مارنا شروع کردیئے تفصیلات کے مطابق تھانہ سٹی پتوکی کے علاقہ گلبرگ ٹاؤن میں دو ماہ قبل روسہ ٹبہ کی رہائشی رخسانہ بی بی کا بھائی امجد پتوکی محلہ

گلبرگ ٹاؤن میں عروسہ عرف پوجا ،پروین بی بی کے گھر آیا تو عروسہ نے امجد کو چائے میں نشہ آور اور زہریلی ادویات کھلا دیں جس سے امجد زندگی کی بازی ہار گیا، عروسہ اور پروین نے اپنے دو کس نامعلوم ساتھیوں کی مدد سے امجد کی ڈیڈ باڈی کو گلبرگ ٹاؤن میں سڑک پر پھینک دیا اور ملزمان موقع سے فرار ہوگئیں اطلاع ملتے ہی پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی پولیس نے ڈیڈ باڈی کو اپنی تحویل میں لیکر پوسٹ مارٹم کیلئے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال پتوکی منتقل کردیا جہاں پر ڈاکٹر نے سیمپل پنجاب فرانزک لیبارٹری بھیج دئے جبکہ امجد کی موت زہر دینے سے واقع ہوئی جس پر تھانہ سٹی پتوکی پولیس نے عروسہ بی بی ،پروین بی بی اور دو کس نامعلوم ملزمان کے خلاف مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا اور پولیس نے ملز مان کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارنا شروع کردیے مدعی مقدمہ رخسانہ بی بی کے مطابق مقتول امجد سے عروسہ بی بی شادی کرنا چاہتی تھی لیکن ہم نے امجد کی منگنی ٹھینگ موڑ کردی تھی اسی عناد پر عروسہ نے اپنے ساتھیوں سے مل کر میرے بھائی امجد کو چائے میں زہر دے کر مار دیاہے مقتول کی بہن رخسانہ بی بی نے اپیل کی کہ وزیر اعلی پنجاب ،آئی جی پنجاب ،فوری طورپر نوٹس لیں اور ہمیں انصاف فراہم کریں ۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں