38

5سالہ بچے کی باپ کی بجائے ماں کے نام سے پکارے جانے کی استدعا، فیملی کورٹ نے زبردست فیصلہ سنادیا

سرگودھا(این این آئی)سرگودھا میں پانچ سالہ بچے کی باپ کی بجائے ماں کے نام سے پکارے جانے کی استدعا پر فیملی کورٹ نے باپ کی حصول بچہ کے لئے درخواست خارج کر دی۔زرائع کے مطابق فیملی کورٹ کے جج شکیل احمد کوتنویر احمد کو مطلقہ بیوی سے بچہ دلا پانے کی درخواست دائر کی جس میں مطلقہ عمیرہ بی بی کے ساتھ گزشتہ روز عدالت میں پیش 5سالہ بچے فہد نے اپنی توتلی زبان میں کہانی بیان کی کہ میں نے چھوٹی سی عمر میں اپنی ماں کو روتے ہوئے دیکھا۔جس وقت میری انگلی پکڑ کر سکول جانے،بازار جا کر

چیزیں لینے کے دن تھے ظالم باپ نے ماں کو طلاق دے کر میرے ساتھ گھر سے نکال دیا۔جہاں دادی اور پھوپھیاں والدہ پر زبان کے تیر چلاتے ہوئے زدوکوب کرتی اور نوکرانی کی طرح سارے گھر کا کام کرواتیں تھیں۔اب اس ماں نے مجھے پال پوس کر آج ماں کا سہارا بننے کے قابل کیا مجھے باپ سے سخت نفرت ہے اس لئے مجھے باپ کی بجائے ماں کے نام کے ساتھ پکارا جائے۔عدالت میں بچے کی پکار پر سب آبدیدہ ہو گے اور فاضل جج نے حصول بچہ کی درخواست خارج کر کے بچے فہد کو ماں کی پرورش میں واپس کر دیا۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں