42

ہمارا نشانہ اسمبلی تھی ، گرفتار دہشت گردوں کے چونکا دینے والے انکشافات‎

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) شاہ لطیف ٹائون سے گرفتار دہشت گردوں سے ابتدائی تحقیقات سندھ اسمبلی و دیگراہم مقامات کو نشانہ بنائے جانے کا انکشاف سامنے آیا تاہم مزید تحقیقات کی جا ری ہے۔تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے شاہ لطیف ٹاوٗن سے گرفتار دہشت گردوں نےتفتیش میں تہلکہ خیز انکشافات کئے ،ابتدائی تحقیقات میں سندھ اسمبلی و دیگراہم مقامات کو نشانہ بنائے جانےکا انکشاف سامنے آیا۔نجی ٹی وی اے آر وائی کی رپورٹ کے مطابق دہشت گردوں نے انکشاف کیا کہ ہمارا ہدف سندھ اسمبلی تھی ، سندھ اسمبلی کےبعد کچھ اہم مقامات کو ٹارگٹ کرنا تھا ، ذرائع کا

کہنا ہے کہ سی ٹی ڈی ،حساس ادارے دہشتگردوں سےمسلسل تفتیش کررہےہیں، کراچی سے گرفتار دہشت گردوں کا ہدف سندھ اسمبلی تھی۔تفتیشی ذرائع نے کہا شاہ لطیف ٹاؤن سے گرفتار دہشتگرد افغانی ہیں ، دہشت گردوں کے گروپ کو افغانستان سے آپریٹ کیا جا رہاتھا، اس حوالے سے موبائل فون اور کمیونی کیشن ڈیٹا حاصل کر لیا گیا۔ذرائع کے مطابق بارود سے بھرا رکشہ اور خودکش جیکٹس تیار کی گئی تھی ، دہشت گرد سندھ اسمبلی پر حملے کی مکمل تیاری کر چکے تھے تاہم گرفتار دہشت گردوں سے مزید تحقیقات کی جا رہی ہے۔یاد رہے آج صبح انسداد دہشت گردی فورس اور حساس اداروں کی جانب سے دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پر شاہ لطیف ٹاوٗن میں موجود مکان پر چھاپہ ماراتھا ، جس پر دہشتگردوں نے سیکیورٹی اہلکاروں پر حملہ کردیا تھا۔فائرنگ کے تبادلے میں ایک دہشت گرد ہلاک جبکہ پانچ دہشتگردوں کو گرفتار کرکے بھاری مقدار میں بارودی مواد برآمد کرلیا تھا۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں