47

چین کی کرونا ویکسین کے بعد پاکستان نے ایک اور بڑے ملک کی ویکسین کے ہنگامی استعمال کی اجاز ت دیدی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، این این آئی )حکومت پاکستان نے روسی کورونا ویکسین کے ہنگامی استعمال کی اجازت دیدی جس کے بعد سپٹنک فائیو ویکسین پاکستان میں استعمال ہوسکے گی، روزنامہ جنگ میں بلال عباسی کی شائع خبر کے مطابق سپٹنک فائیو کے ہنگامی استعمال کیاجازت ڈریپ رجسٹریشن بورڈ نے ڈرگ ایکٹ 1976سیکشن 7 کے تحت دی، پاکستانی کمپنی نے سپٹنک فائیو کے ہنگامی استعمال کی اجازت مانگی تھی، ڈریپ ذرائع کے مطابق کراچی کی فارما کمپنی سپٹنک فائیو کورونا ویکسین درآمد کریگی، فارماکمپنی کوسپٹنک فائیو کے ہنگامی استعمال کی اجازت 3ماہ کیلئے دی گئی۔دوسری جانب وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے

صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا ہے کہ ہماری آبادی 22 کروڑ ہے جس میں سے 10 کروڑ افراد ویکسین لگوانے کے اہل ہیں ،چینی ویکسین کے بعد جسم درد، بخار معمول کی بات ہے،سائنو فارم اچھی اور قابل بھروسہ ویکسین ہے جس کی افادیت 86 سے 89 فیصد بتائی جاتی ہے جو اچھی شرح ہے،ہیلتھ کیئر ورکرز کو کورونا وائرس کی بیماری سے بچائو میں مدد ملے گی،ویکسین کی رسائی اس ماہ کے آخر سے شروع ہوجائے گی، مارچ تک 70 لاکھ خوراکیں اور دوسری سہ ماہی میں بقیہ ایک کروڑ خوراکیں موصول ہوجائیں گی۔ میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے بتایا کہوزیراعظم نے علامتی طور پر اسلام آباد کے ایک بڑے ہسپتال کے ڈاکٹر کو اپنے سامنے ویکسین لگوائی جس کے بعد ملک کے تمام صوبوں اور وفاقی اکائیوں میں وہاں کی قیادت کے سامنے اس مہم کا باقاعد آغاز ہوگیا ہے۔سائنو فارم کے بارے میں بتاتے ہوئے ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہیہ ایک اچھی اور قابِل بھروسہ ویکسین ہے جس کی افادیت 86 سے 89 فیصد بتائی جاتی ہے جو اچھی شرح ہے۔انہوں نے کہا کہ اس ویکسین کو چین کے علاوہ مصر اور ہنگری میں بھی اجازت مل چکی ہے، متحدہ عرب امارات میں اس کا تحقیقی ٹرائل ہوا تو اس میں اس کی افادیت 86 فیصد بتائی گئی۔انہوں نے کہا کہ یہ اچھی، مناسب اور مفید ویکسین ہے جس سے ہیلتھ کیئر ورکرز کو کورونا وائرس کی بیماری سے بچا ئومیں مدد ملے گی۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں