42

اپوزیشن چیمبر کے اخراجات کی مد میں ن لیگ کے بیس ارکان اسمبلی ڈیفالٹر نکلے، تہلکہ خیز انکشاف

لاہور(این این آئی) اپوزیشن چیمبر کے اخراجات کی مد میں مسلم لیگ (ن)کے بیس ارکان صوبائی اسمبلی ڈیفالٹر نکلے، لیگی اراکین چائے بسکٹ کے لئے ماہانہ پانچ،پانچ ہزار روپے بھی جمع نہ کروا سکے،سہیل شوکت بٹ،باؤ اختر علی،عظمی زعیم قادری، نعیم صفدر انصاری سمیت متعدد ارکان اسمبلی نے طویل عرصہ سے فنڈ نہیں دیا۔نجی ٹی وی کے مطابق اپوزیشن چیمبر کے اخراجات چلانے کے حوالے سے مسلم لیگ (ن)کے ارکان صوبائی اسمبلی کو پابند کیاگیاہے کہ ہر ماہ جب انہیں پنجاب اسمبلی سے تنخواہ ملتی ہے تو پانچ ہزار روپے فنڈ جمع کروائیں تاکہ اپوزیشن چیمبر میں چائے،بسکٹ سمیت دیگر

اخراجات پورے ہو سکیں تاہم ذرائع کے مطابق 20لیگی اراکین کی جانب سے طویل عرصہ سے پانچ،پانچ ہزار روپے جمع نہیں کروائے گئے جن میں سہیل شوکت بٹ، باؤ اختر علی، عظمی زعیم قادری، نعیم صفدر انصاری، محمد ارشد، چودھری مظہر اقبال، کاشف محمود، رانا عبدالرؤف، محمد صدیق خان بلوچ، نغمہ بلوچ، رانا اعجاز احمد، عطا الرحمان، بابر حسین، کاشف علی چشتی، علی عباس، جاوید عبداللہ، محمد الیاس، ظفر اقبال، لیاقت علی اور خوش اختر سبحانی شامل ہیں۔ ذرائع کے مطابق ان ارکان اسمبلی کی جانب سے پیسے جمع نہ کروانے کے حوالے سے قیادت کو آگاہ کردیا گیا ہے۔  اپوزیشن چیمبر کے اخراجات کی مد میں مسلم لیگ (ن)کے بیس ارکان صوبائی اسمبلی ڈیفالٹر نکلے، لیگی اراکین چائے بسکٹ کے لئے ماہانہ پانچ،پانچ ہزار روپے بھی جمع نہ کروا سکے،سہیل شوکت بٹ،باؤ اختر علی،عظمی زعیم قادری، نعیم صفدر انصاری سمیت متعدد ارکان اسمبلی نے طویل عرصہ سے فنڈ نہیں دیا۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں